Topics

Our Gay-enabling Islamic Leadership (1)

Jawed Anwar
 

Our Gay-enabling Islamic Leadership (1)

Gay Bible is now available for those who feel the need to have their gay lifestyle justified by Scriptures. Verses condemning homosexuality are now re-written gay friendly scripture. 

Similarly, things are changing so fast in the “Islamic” leadership that it is not beyond the comprehension that gay-friendly “shariah” might be developed soon.    MORE


PREVIOUS:

Are We Not All “Homophobes”?

 

Syed Jawed Anwar

I was shocked when I heard the news that Tanya Granic Allen (a prominent activist against sex-ed curriculum and a candidate for last PC leadership race) was removed as Ontario PC party candidate by Doug Ford during June 2018 election campaign. It was May 5, 2018, five weeks after my heart bypass surgery and more than one month before the election. She was no longer the PC candidate from the Mississauga Centre riding. The allegation was her “irresponsible” comments on the homosexual lifestyle.  MORE

 

سید جاوید انور

( نوٹ :یہ کالم 28 جولائی  2018 کو لکھا گیا) 

 

اکستان کا 2018انتخابی عمل مکمل ہوا اور امید ہے کہ عمران خاں وزیر اعظم کی حیثیت سے جلد ہی حلف لے لیں گے۔اور امکان یہی ہے ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی

حکومت مرکز میں اگلے پانچ سال پوری کرے گی۔اور جس طرح یہ افواہ غلط ثابت ہوئی کہ انتخاب اپنے وقت مقررہ پر نہیں ہوں گے، اب وسط مدتی انتخاب کے امکان کی افواہ بھی جلد دم توڑ دے گی ۔پاکستان کی معیشت کے کس بس نکل ر ہیں، زندگی کے لئے ہوا کے بعد سب سے ضروری شئے پانی ہے جس کی قلت، شدید بحران کی کیفیت پیدا کرنے والی ہے۔ امریکا نے ہاتھ کھینچا ہوا ہے او ر فوجی ادارہ سمیت تمام ریاستی اداروں کے اندر اتنی جان نہیں کہ وہ اب کوئی ایڈونچر کر سکے۔ متحدہ مجلس عمل( ایم ایم اے) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی نتائج نہ تسلیم کرنے اور حلف نہ لینے کی بات ایک آدھ سیاسی جماعت کے سوا کسی نے نہیں مانی ہے۔اور عمران خان کی فتح کی تقریر میں جومصالحتی اشارے ہیں اس میں مسلم لیگ (ن) اور ایم کیو ایم کے ساتھ تمام جماعتیں راحت کی کچھ امید لگا رہے ہیں ۔اس طرح اگر متحدہ مجلس عمل نے اسمبلیوں کے بائیکاٹ اور حلف نہ لینے کا فیصلہ کیا تو وہ سیاسی موت کے پروانہ پر دستخظ کرنے کے مترادف ہو گا۔ مزید